شمالی علاقوں میں ذاتی گاڑی کا سفر

Published By Mobeen Mazhar
اس بات میں شک نہیں کہ سکردو (Skardu) یا خنجراب (Khunjrab) سائیڈ کے سفر میں آپ کے پاس اپنی گاڑی (Personal Car) ہو تو سفر کا مزا دوبالا ہو جاتا ہے…
 
جہاں دل کرے رُک جائیں،
جہاں مرضی چائے پئیں،
جہاں سے مرضی کھانا کھائیں…
 
لیکن اس سلسلے میں کچھ اہم باتیں ذہن میں ہونی چاہیئں:
 
– سفر کے دوران روڈ کنڈیشن جاننا نہایت ضروری ہے.
– اسی طرح راستے کے پیٹرول پمپ اور پنکچر کی دوکان کا علم بھی ہونا چاہیے.
Tyre Puncture on Road trip شمالی علاقوں میں ذاتی گاڑی کا سفر

زیرو ٹالرنس

کچھ چیزوں پر زیرو ٹالرنس طے کر لیں. مثلاً

  • 1- ٹائر پنکچر ہو تو سٹپنی لگالیں لیکن جیسے ہی پنکچر کی پہلی دوکان آئے، ٹائر کو فوراً پنکچر لگوائیں.
  • 2- سفر کے دوران کبھی بھی گاڑی کا فیول گیج آدھے سے نیچے ہرگز نہ آنے دیں.

احتیاطی تدابیر

  • احتیاطیں:
    1- کم سے کم سوا دو لیٹر کی بوتل میں پیٹرول ساتھ رکھیں.
     

    2- اسی طرح کم سے کم تین بوتلیں پانی کی رکھیں. ریڈی ایٹر کہیں بھی گرم ہو سکتا ہے.

    3- انجن گرم ہو جائے تو فوراً گاڑی سائیڈ پر روک لیں لیکن انجن کو جلدی بند مت کریں بلکہ کچھ دیر نیوٹرل چلتا رہنے دیں. تقریباً پانچ منٹ بعد انجن بند کریں. اب آپ ریڈی ایٹر پر پانی ڈال سکتے ہیں۔ 

    4- بھول کر بھی انجن پر پانی مت ڈالیں. گرم انجن پر ٹھنڈا پانی ڈالنے سے وہ جام ہو جاتا ہے. اگر انجن جام ہو جائے تو اس کی مرمت کا خرچہ 40-50 ہزار روپے ہوتا ہے.

    5- گیس کِٹ پھٹ جائے تو اس کی مرمت کا خرچہ 12-15 ہزار تک آتا ہے. گیس کٹ کا کام سکردو، ہنزہ (Hunza) اور گلگت (Gilgit) میں ہو سکتا ہے. لیکن انجن سیز ہو جائے تو گاڑی ٹرک پر رکھوا کر پنڈی لانی پڑے گی. جس کا الگ خرچہ 30-35 ہزار آئے گا.

    6- سکردو، گلگت اور ہنزہ میں گاڑیوں کی ورکشاپس مغرب کے وقت ہی بند ہو جاتی ہیں، جو بھی کام کرانا ہو مغرب سے پہلے پہلے کرا لیں.

راستے کی معلومات :
راستے کی معلومات اور سڑک کی صورتحال کبھی بھی کسی دوکاندار یا عام راہگیر سے نہ پوچھیں.
بلکہ کسی ایسے ٹیکسی یا ویگن ڈرائیور سے پوچھیں جس نے متعلقہ روٹ پر خود گاڑی چلائی ہو. کم از کم چار لوگوں سے سڑک کی کنڈیشن پوچھنی چاہیے. کیونکہ ہر بندہ اپنے مزاج کے مطابق گائیڈ کرتا ہے.
 
مثلاً دیوسائی (Deosai) کے سفر میں ہم اپنی ہونڈا سوک (Honda Civic) پر تھے، تین جیپ والوں نے ہمیں بتایا کہ یہ گاڑی دیوسائی نہیں جا سکتی.
 
جبکہ ہمارے دو دوست جو اپنی کرولا (Corolla) پر آچکے تھے وہ بضد تھے کہ گاڑی ضرور جائے گی. بس آرام آرام سے لے جانا اور پھر ہم لے بھی گئے.
 
فیوز کی معلومات:
کبھی فرصت میں اپنی گاڑی کے فیوز وغیرہ کی معلومات اپنے مکینک یا انٹرنیٹ سے ضرور دیکھ لیں. کیونکہ ایک پانچ روپے کا فیوز آپ کو راستے میں پریشان کر سکتا ہے. عموماً گاڑی کے فیوز پینل پر کچھ اضافی فیوز موجود ہوتے ہیں جن کی تبدیلی سے آپ سفر کو جاری رکھ سکتے ہیں.
Tyre change on road شمالی علاقوں میں ذاتی گاڑی کا سفر
اترائی پر بریک کا استعمال:

پہاڑی علاقوں میں اترائی پر گاڑی کو کسی صورت نیوٹرل مت کریں. بلکہ پہلے یا دوسرے گئیر میں اتریں. اس سے بریکس پر کم بوجھ آئے گا.

اگر آپ کی آٹومیٹک گاڑی ہے تو L یا D2 پر اتریں، آٹو میٹک گاڑی کی بریکس کو کچھ دیر اترائی کے بعد 10 منٹ کا ریسٹ دینا بہتر ہے.

بریک کو ٹھنڈا کرنے کے لیے ان پر پانی ڈالنے کی غلطی نہ کریں، وہ کریک کر سکتی ہیں.

آخری بات یہ کہ پہاڑی راستوں میں موبائل سگنل موجود نہیں ہوتے. لیکن مجموعی طور پر یہ علاقے پر امن ہیں اور یہاں کے لوگ سیاحوں کی مدد کو تیار رہتے ہیں. لہذا زیادہ پریشانی کی بات نہیں ہے.

مصنف کے بارے میں

سید مستقیم معین

مصنف لاہور کی ایک نجی یونیورسٹی میں لیکچرار ہیں اور پی ایچ ڈی سکالر ہیں۔ 
وائلڈرنیس ایکٹیویٹیز میں دلچسپی رکھتے  ہے۔ پاکستان کے تمام صوبوں کو وزٹ کر چکے ہیں۔  سیاحتی سفر نامہ لکھنے کا ان کا اپنا ایک انداز ہے۔  پاکستان کے شمال کو دنیا بھر میں اجاگر کرنے کا عزم رکھتے ہیں۔

قراقرم کہانی کے لیے لکھیے

Contact Us

We're not around right now. But you can send us an email and we'll get back to you, asap.

Start typing and press Enter to search