… یہ پہاڑوں کی مہربانی ھے

Published By Mobeen Mazhar

… یہ پہاڑوں کی مہربانی ھے

کون دیتا ھے آواز دوبارہ…؛؛

میں “ثوبیہ چوہدری” کون ہوں . اس سوال کی تلاش ہی نے پہاڑوں سے عشق کروایا . انسان خودغرض ھے کسی سے عشق نہیں کرتا ہر کوئی اپنی ذات کے خول میں بند ھے۔

ہم پہاڑوں, وادیوں میں کیا لینے جاتے ہیں , یہ وہ سوال ھے جو ہم خود سے اور لوگ ہم سے کرتے ہیں۔ 

گوپس - وادیِ غذر

(Gupis – Ghizer Valley, Pakistan) گوپس – وادیِ غذر ، پاکستان 
عکاسی: ثوبیہ چوہدری

 

 

کیا سچ میں پہاڑ ہمیں بلاتے ہیں ؛؛؛؛

کہتے ہیں محبت کو امر کرنا ہو تو اس سے بچھڑ جاؤ جسے چاہت کی آخری حد تک چاہا ھے .اس کی جدائی کا اپنا حسن ھے . یہاں تک کے اس کی جدائی کے نوحے سنائی دیتے ہیں اس کی خوشبو ہر وقت ہمارا تعاقب کرتی ھے… .. پھر وہ لمحے سے جدا نہیں ہوتا ہر وقت ساتھ ساتھ رہتا ہے سائے کی طرح جسے ہم کبھی بھی نہیں بهول سکتے۔

اس لئے پہاڑ ہمیں بلاتے ہیں ان سے جدا ہونے کے بعد ان کی محبت امر ہو چکی ہوتی ہے ۔۔

وادیِ غذر

 (Phandar – Ghizer Valley, Pakistan) پھنڈر – وادیِ غذر، پاکستان
عکاسی: ثوبیہ چوہدری

کیونکہ ؛؛؛؛

جس طرح آنکھوں کو نظاروں کی ہوس ہوتی ھے

نظارے بھی سراہنے والی آنکھوں کے متلاشی ھوتے ھیں ۔۔

کوئی منظر عام نہیں ہوتا .یہ منظر کے بس میں نہیں ہوتا کہ وہ عام ہو سکے .اور نہ ہی وہاں پہنچنے والے عام ہوتے ھیں

اک نظر اور ادھر دیکھ مسیحا میرے
تیرے بیمار کو آیا نہیں آرام ابھی

مصنفہ کے بارے میں

ثوبیہ چوہدری

 ثوبیہ قراقرم کلب کی فعال رکن ہیں اور باقائدگی سے اپنی فیملی اور دوستوں کے ساتھ پہاڑوں کا سفر کرتی ہیں۔ کلب کے آغاذ سے اب تک بہت سارے دلچسپ سفر نامے تحریر کر چکی ہیں۔

قراقرم کہانی کے لیے لکھیے

Contact Us

We're not around right now. But you can send us an email and we'll get back to you, asap.

Start typing and press Enter to search